کورونا وائرس اور اس سے جنگ کے لئے شہری انتظامہ کا رول : بیورو چیف رحیم یار خان

رحیم یار خان( بیوروچیف)
کورونا وائرس کے پھیلاﺅ کو روکنے اور عوامی تحفظ کے لئے حکومت پنجاب کی جانب سے صوبہ بھر میں لاک ڈاﺅن اور دفعہ144کا نفاذ ، عوام کو حکومتی ہدایات پر عملدرآمد اور گھروں تک محدود رکھنے کے لئے ضلعی انتظامیہ کے زیر اہتمام فلیگ مارچ کیا گیا جس میں پاک فوج، رینجرز، پولیس، ریسکیو1122 سمیت دیگر قانون نافذ کرنیوالے ادارے شامل تھے۔کمانڈر60برگیڈ برگیڈئیرعاطف مجتبی نے ڈپٹی کمشنر علی شہزاد، ڈی پی او منتظر مہدی کے ہمراہ فلیگ مارچ کی قیادت کی۔فلیگ مارچ کا آغاز ڈپٹی کمشنر آفس سے ہوا جو شہر کے مختلف راستوں شاہی روڈ، بیجیئم چوک، لکڑ منڈی چوک،ائیر پورٹ روڈ، سرکلر روڈ، فوجی چھاﺅنی چوک، دڑی سانگی، ابوظہبی روڈ، ہسپتال روڈ، ڈی ایچ کیو چوک سے ہوتا ہوا ڈپٹی کمشنر آفس اختتام پذیر ہوا۔فلیگ مارچ میں پاکستان آرمی، ضلعی انتظامیہ، رینجرز ، پولیس، ریسکیو1122سمیت دیگر قانون نافذ کرنیوالے اداروں کی گاڑیاں شامل تھی جبکہ ٹریفک پولیس کے موٹر سائیکل سواروں نے فیلگ مارچ کی رہنمائی کی۔کمانڈر60برگیڈ برگیڈئیر عاطف مجتبی، ڈپٹی کمشنر علی شہزاد اور ڈی پی او منتظر مہدی نے اپنے پیغام میں کہا کہ حکومت اور ادارے مشکل کی اس گھڑی میں شہریوں کے جان و مال کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لئے موثر انداز میں ذمہ داریاں نبھائے گی۔اس فلیگ مارچ کا مقصد پاک آرمی، انتظامیہ، پولیس، رینجرز اور دیگر قانون نافذ کرنیوالے اداروں کو امن و امان برقرار رکھنے اور کسی بھی چیلنج کا مقابلہ کرنے کی تیاریوں کو ظاہر کرنا ہے۔انہوں نے اپنے پیغام میں کہا کہ تمام سول وملٹری انتظامیہ کورونا وائرس جیسی وباءسے اپنے عوام کو محفوظ رکھنے کے لئے فرنٹ لائن پر موجود ہیں اور عوام سے صرف ایک ہی تعاون مانگتے ہیں کہ وہ خود کو اپنے گھروں تک محدود کرکے کورونا وائرس کے خلاف جاری جنگ میں ہمارا ساتھ دیں اور انشاءاللہ عوامی تعاون سے ہم یہ جنگ بھی جیتیں گے

رحیم یار خان( بیوروچیف)

ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے کہا ہے کہ کرونا وائرس کے پھیلاو¿ کو روکنے کے لئے ہر ممکن انسانی وسائل کا استعمال کیا جا رہا ہے،شہری غیر ضروری گھروں سے نہ نکلتے ہوئے حکومتی اقدامات کو کامیابی سے ہمکنار کر سکتے ہیں۔ایم این اے چوہدری جاوید اقبال وڑائچ کے ہمراہ انہوں نے ضلعی رابطہ کمیٹی برائے انسداد کورونا کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہا کہ عوام حکومت کی جانب سے نافذ کردہ پابندیوں کی پاسداری کریں تاکہ جلد از جلد اس موذی وبا کا ارض پاک سے خاتمہ کیا جا سکے۔اجلاس میں ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(ریونیو)ڈاکٹر جہانزیب حسین لابر، ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر(جنرل)شیخ محمد طاہر، سی ای او ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی ڈاکٹر سخاوت علی رندھاوا، ڈی ایچ او ڈاکٹر حسن خان، ایم ایس شیخ زید ہسپتال ڈاکٹر غلام ربانی،فوکل پرسن کورونا کنٹرول روم ڈاکٹر عمران سمیت دیگر متعلقہ اداروں کے افسران اجلاس میں شریک تھے۔ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ضلع میں کورونا وائرس سے متاثرہ کوئی کیس رپورٹ نہیں ہوا ۔ضلع میں17مشتبہ مریض زیر علاج ہیں جس میں سے 5مریضوں کے کورونا ٹیسٹ منفی آئے ہیں جبکہ دیگر5کی رپورٹ کا انتظار ہے۔انہوں نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ مکمل متحرک اور تمام اداروں کے ساتھ رابطہ میں ہے ۔انہوں نے مشکل حالات میں فرائض کی ادائیگی کرنے والے ڈاکٹرز، پیرا میڈیکل سٹاف، انتظامی افسران، فوج ، پولیس و دیگر اداروں کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس وقت تمام حکومتی ادارے ایک پیج پر ہیں اور سب کا ایک ہی مقصد ہے کہ عوام کو اس وبائی مرض سے محفوظ رکھنا۔ایم این اے چوہدری جاوید اقبال وڑائچ نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان عمران خان کی ہدایت پر تمام صوبائی حکومتیں کورونا وائرس کو شکست دینے کے لئے قومی جذبے سے میدان عمل میں ہیں اور آج ہمیں یکجہتی کی اشد ضرورت ہے ۔انہوں نے وائرس کے پھیلاﺅ کو روکنے کے لئے ضلعی انتظامیہ کی کاوشوں کو سراہتے ہوئے کہا کہ تمام مکاتب فکر کے ذمہ داران کو اس وقت عوام کو گھرں تک محدود رہنے کی آگہی فراہم کرنا ہو گی ۔سی ای او ڈسٹرکٹ ہیلتھ اتھارٹی نے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ ضلع کے تمام ہسپتالوں میں طبی سہولیات فراہم کی جا رہی ہیں جبکہ ٹی ایچ کیوز میں کورونا قرنطینہ سنٹرز اور آئسولیشن وارڈز فنکشنل ہیں۔ضلعی فوکل پرسن ڈاکٹر عمران نے بتایا کہ 5مشتبہ مریضوں کی رپورٹ منفی آئی ہے جبکہ 5کی رپورٹس کا انتظار ہے اور دیگر 7مریضوں کے ٹیسٹ روانہ کئے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز کورونا کنٹرول روم سمیت حکومتی اداروں کی جانب سے نشاندہی کردی161بیرون ممالک سے آنے والے افراد کی سکریننگ کا عمل مکمل کیا گیا ۔

رحیم یار خان(بیوروچیف )

ڈپٹی کمشنر علی شہزاد نے حکومت پنجاب کی جانب سے پنجاب ایمرجنسی آرڈیننس برائے ناگہانی آفات کے تحت ضلع بھر کے بینک کو حفاظتی اقدامات مکمل کرنے کے احکامات جاری کر دیئے۔ڈپٹی کمشنر کی جانب سے جاری احکامات کے تحت ضلع کی حدود میں موجود تمام بینک اے ٹی ایم مشینوں کے باہر ہینڈ سینٹائزرڈ، جراثیم کش واٹر باتھ اور صابن کی دستیابی یقینی بنائیں گے۔اے ٹی ایم سے رقم نکلوانے والے شہری اے ٹی ایم کے استعمال سے پہلے اور بعد میں ہینڈ سینٹائزرڈیا جراثیم کش پانی سے ہاتھ دھوئیں گے۔ضلع ہذا کی تمام بینک انتظامیہ اے ٹی ایم کے باہر ہینڈ سینٹائزرڈ اور جراثیم کش پانی، صابن کی دستیابی یقینی بنانے کے لئے ایک فوکل پرسن نامزد کرے گی جو اے ٹی ایم مشین کے پاس ہینڈ سینٹائزرڈ /جراثیم کش واٹر باتھ اور صابن کی دستیابی یقینی بنائے گا۔احکامات پر عملدرآمد نہ کرنے والی بینک انتظامیہ کے خلاف قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

 

مصنف کے بارے میں

اسد محمود

اسد محمود

کالمسٹ، رپورٹر اردو پوائنٹ ڈاٹ کام، بیورو چیف پائیلون ٹی وی(یو ٹیوب چینل) و رابطہ ڈاٹ نیٹ۔
https://raabta.net
https://raabta.net/urdu
https://www.youtube.com/pylontv

تبصرہ کریں

تبصرہ پوسٹ کریں